واہگہ!_________عظمی طور

واہگہ ! میں نے تیرا ذکر اس وقت سنا جب کبھی تیرے سینے پہ سبز پرچم لہرائے اور سبھی اترائے…

کفارہ۔۔۔۔۔۔۔صوفیہ کاشف

“یہ چہرہ بہت خوبصورت تھا جب تک اس پر محبت کے نام کی کالک نہیں لگی تھی” مجھے آتے ہوئے…

سائنس کے سینے پر بندوق کا فائر

— نانا جانی…؟ جی بچے. نانا جانی کلاس میں ٹیچر نے لیکچر کے دوران بتایا پوچها کیا؟ دهرتی گول ہے…