اپنی ادبی خدمات کے اعتراف میں ستارہ امتیاز سمیت مختلف ایوارڈز حاصل کرنے والے جناب محمد حمید شاہد نے ہمارے ہفتہ وار پروگرام میں صوفیہ کاشف کے ساتھ گفتگو میں اپنی ذات ، کام اور کام کے طریقوں کے بارے میں دلچسپ گفتگو کی۔

حمید شاہد صاحب نے بتایا کہ وہ اپنے والد صاحب کی طرح حلیم ہونا چاہتے تھے مگر وہ شاید ان کے جیسے نہ ہو سکے۔”آپ کے اندر بہت سی دیواریں کھڑی ہوتی ہیں انہیں پھلانگنا بڑا مشکل ہوتا آپ دوسرے آدمی کی طرح نہیں بن سکتے”

حمید شاہد صاحب نے اچھا لکھنے کے گر بتاتے ہوئے کہا:

“آپ یہ طےکر لیں کہ میں نے یہ دریافت کرنا ہے کہ لوگ کیسا برا لکھتے ہیں،اور دیکھ لیں کہ آپ نے ایسا نہیں لکھنا،پھر اچھی ترین چیزیں بھی پڑھ لیں،اور سوچ لیں کہ آپ نے ایسا بھی نہیں لکھنا،مجھے اپنا طریقہ دریافت کرنا ہے جو سب سے بہترین ہونا چاہیے!”

حمید شاہد صاحب کی مکمل گفتگو کے لئے لنک پر کلک کریں

ایک گفتگو محمد حمید شاہد کے ساتھ!