……. وبا کے دنوں میں 

دروازے پہ دستک نہ گھنٹی کی ٹن ٹن

 گاڑی کا ہارن نہ رکشے کا شور  
عجب سا سناٹا ہے چھایا ہوا
  فضا میں اداسی
  ہوا میں نراش
  یہ کیسا جہاں ہے
  وقت تھم گیا ہے
   بند دروازوں کے پیچھے
 تنہائی کی وحشت 
 تخلیہ تخلیہ پکارے سکوت
  انسان سارے اعتکاف بقا میں
  لب بھی چپ ہیں
  آنکھیں بھی خاموش 
دل محو دعا  
معاف کردے خدا 
  دور کردے وبا
   اے خدا اے خدا  
__________
          تحریر:شازیہ ستا ر نایاب۔ لاہور

فوٹوگرافی و کور ڈیزائن :صوفیہ کاشف