کاسنی پھولو کہو!

تم نے اُس کو

کون سے موسم کی خوشبو میں

ہواؤں کی فصیلوں پر

لکھا تھا آشنا

وہ تو صدیوں پر محیط

اک اجنبی سا گیت ہے

وقت اُس کا نام ہے

رفتار اُس کی ریت ہے!!

————-

کلام:نصیر احمد ناصر

فوٹوگرافی: نصیر احمد ناصر ،صوفیہ کاشف

کور ڈیرزائن:صوفیہ کاشف