سزائے محبت_________

میں ہوں کم سن سی لڑکی

رواجوں سے ڈری لڑکی

دل میں میرے ارماں بھی

دل کی کنڈی میں نے

اندر سے لگائ ہے

محبت وصل کا پودا

پلا گر میرے من میں بھی

بہاریں روٹھ جائیں گی

جو سکھیاں میری سنگت ہے

وہ سکھیاں چھوٹ جائیں گی

میں ہوں کمزور سی لڑکی

رواجوں میں مٙری لڑکی

انا کے بت نہ ہونگے پاش

بنے گی پھر جو میری لاش

زندہ لاشہ لے کے میں

وہ آنگن چھوڑ جاؤں گی

رواجوں نے مجھے توڑا

بہت ہی توڑ کے چھوڑا

خطا بس میری ہے یہ

میں ہوں کمزور سی لڑکی

رواجوں سے ڈری لڑکی

_____________

ازقلم قرةالعین فرخ

فوٹوگرافی و کور ڈیزائن:صوفیہ کاشف

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.