عورت سائنس ہے_________عزیز قاسمانی

——–
سینما کی طرف جاتے ہوئے
اندرونی گلی میں اپنے استاد کے ساتهہ جاتے ہوئے پوچهہ بیٹها
سر مذہب اور سائنس میں تضاد کیوں ہے؟
وہ پہلی گالی کے بعد اصل بات پر آتے تهے
سائنس کا نام ہے معلومات کا ذخیرہ
اور مذہب ایک عقیدہ ہے
ہے کہ نہیں؟
بالکل ہے.
دیکهو بچے مذہب بهی اپنے دور کی ایک سائنس ہی ہے
جہاں پر آکے عقل کا بٹوارا ہو
وہاں پر مذہب رہتا ہے
اب تم بولو تضاد کہاں ہے؟
گالی تو دیتا تها پر بات پتے کی کرتا تها
میں چپ..
جملے کی آخری سطر میری عقل پر جوتے کی طرح پڑی تهی
تب بهی جرءت کردی
سر؟
ہاں بک
شاعری بهلا کیا ہے ؟ججهکنے لگا
کبهی جو مالکل سے ملاقات ہوئی تو تیرے لئے تخئیل لے آئوں گا
غصہ..
مہارت کیا ہے سر..؟میں مہارت کے بارے میں کورا ہوں
تم تو تخئیل کی مہارت کے بارے میں لاولد ہو
نالائق ہو
لب مہران سے چائے پی کر لوٹ رہے تهے
پهر سے ایک جرئت کردی
شاید آخری تهی
سر..
ہوں..جهلاہٹ
عورت کیا ہے؟
عقل کے اندهے.
عورت تو خالق کی کلیات ہے
اور مرد اس کلیات کا بیک ٹائٹل ہے
مرد اور عورت دو الگ الگ اجناس ہیں سر..
تهوڑا سا اعتراض اٹها
یے سمجهہ لو کہ عورت ایک سائنس ہے
اور مرد مذہب ہے

______________

ترجمعہ :سدرتہ المنتہیٰ جیلانی

کورڈیزائن :صوفیہ کاشف

Advertisements