باپ مر جاتا ہے!______ازعزیز قاسمانی،

مترجم:سدرتہ المنتہیٰ جیلانی

کور ڈیزائن: صوفیہ کاشف

عید کی صبح

بیوی نے آکر پوچھا

اپنے لئے کپڑے نہیں بنوائے؟

اب خواہش ہی کہاں رہی ..

اداس تھا

کچھ نہ کہہ سکی.

چپ تھی

اس کا اکلوتا بیٹا نئے نکور جوڑے میں تیار ہوکر عید مل رہا تھا

بیوی خوشی سے چمک اٹھی

پلٹنے لگی

اور اس نے فوری طور پر سوچا تھا

بیٹے کے بعد باپ تو مرجاتا ہے

*******

Advertisements