وہ لمحہ________صوفیہ کاشف

وہ جگمگ کرتا لمحہ

جوذمیں پر ابھی اترا نہیں

اس کی حدت صدیوں سے

میری پور پور میں

دھنک بن کر ذندہ ہے!

وہ جو ٹوٹ بکھرا

حیات کی ہر راہ پر،

پلکوں پر آج بھی اٹکا

اداس سپنا جاگتا ہے!

مقدر میں نہیں تھا جو

میری ہستی کے پیچ و خم میں

وہ وصال ٹھہر گیا ہے!

_______________

کلام و کور ڈیزائن:صوفیہ کاشف

Advertisements

4 Comments

Comments are closed.