تعریف کی تعریف

🎈

کسی شخص یا چیز کو سراہنا تعریف کے زمرے میں آتا ھے مگر آجکل تعریف کی ایک نئ تعریف ایجاد ھوگئ ھے جسے لوگ مکھن لگانا یا مسکہ مارنا بھی کہتے ھیں ھمارے ملک عزیز میں یہ ایک وباء یا بیماری کی طرح پھیلی ھوئ ھے آپکو اپنے کام نکلوانے ھوں کسی سے کچھ حاصل کرنا ھو یاپھر اسکی پوزیشن سے فوائد لینے ھوں تو جھوٹی تعریف اور مکھن پالش کی جاتی ھے ھمارے سیاستدان تو خیر سر سے پاؤں تک لتھڑے ھوئے ھیں اس گندگی سے مگر عوام بھی کچھ کم نہیں مرد و زن کی کوئ تفریق نہیں اسمیں سب دبا کر وقتی فوائد کے لیئے ایک دوسرے کی لیپا پوتی کرتے رھتے ھیں جبکہ ھمارے مذہب کی تعلیمات بھی جھوٹ سے منع کرتی ہیں مگر شاید ھم اس چیز کو جھوٹ کے زمرے میں لیتے ھی نہیں ھم جائز سمجھتے ھیں اپنے مطلب کے لیئے جھوٹی تعریف کرنا جبکہ اگر کسی میں واقعی کوئ گن ھے جو لائق تعریف بھی ھے مگر چونکہ وہ بندہ ھمارے کسی کام کا نہیں تو ھم حسد اور جلن کا شکار ھوجاتے ھیں تعریف تو کجاء اسکے کام میں ھزار کیڑے ڈھونڈ کر نکالنے میں پیش پیش رھتے ھیں کیوں ایسا کس لیئے ھے ؟؟؟
کیا ھمارا قومی مزاج خوش آمدانہ ھوگیا ھے یا ھم بحثیت مجموعی اخلاقی پستی کا شکار ھیں کسی کو ترقی ملے کسی کا بچہ ٹاپ کرلے کسی کی بیٹی کی اچھی جگہ شادی طے پا جائے کوئ نیا مکان بنا لے بعض لوگ حسد میں اندھے ھوکر مبارک دینا یا تعریف کرنا گناہ سمجھتے ھیں ورکنگ پلیس پر پروفیشنل جیلیسی اور نجی زندگی میں اپنی ناکامیاں ھمیں چبھتی رھتی ھیں اور اس چبھن کو ھم نیزہ بنا کر دوسرے کے کلیجے کو چھلنی کرتے رھتے ھیں یہ سوچے بغیر کہ ھمارا یہ تکلیف دہ عمل دوسرے کو کتنا دکھ دیتا ھے مگر نہیں پانچ وقت نماز پڑھیں گے روزے رکھیں گے نفلی عبادات کریں گے مگر سچے دل سے تعریف نہیں کریں گے تاوقتیکہ ھماری کوئ غرض اس شخص سے وابستہ نا ھو ۔۔۔
اپنا محاسبہ کرنے کے لیئے ھفتے میں ایک دن مقرر کریں رات کی خاموشی میں لیٹ کر سوچیے اس ھفتے کس کس کو جھوٹی تعریف کرکے آسمان پر چڑھایا اور کس کو آپکی ستائش کی واقعی ضرورت تھی مگر کیونکہ بندہ بے کار تھا آپکے لیئے اسلیئے دو بول منہ سے نکالنا بھی مناسب نا سمجھا دونوں انتہاؤں سے بچنے کی کوشش کریں. یقین جانیں دل مطمئن ھوجائے گا۔۔۔

دنیا کے معروف ماہر نفسیات ڈاکٹر الفریڈ ایڈر کہتے ہیں میں نے اپنے مریضوں سے کہا “آپکی پریشانی اضطراب اور افسردگی چالیس دن میں ختم ھوسکتی ھے اگر آپ کسی کی تہہ دل سے سچی تعریف کریں تو” ۔۔۔۔

________________

تحریر۔۔اسماء ظفر

فوٹوگرافی: صوفیہ کاشف

Advertisements

2 Comments

  1. اسما باجی قلم اور کتاب سے طویل دوستی کے بعد بلآخیر بلاگگ کی طرف اپکی آمد بلاشبہ ایک نہایت خوش کا باعث ہے امید ہے کے آپ اچھی اور معیاری تحایر سے جلد جلد تشنگی اور مزید دوآشتہ کریں گیں

    Liked by 1 person

    1. ضرور! انشااللہ صوفیہ لاگ ڈاٹ بلاگ پر آپکو اسما کی تحریریں ملتی رہیں گی۔ہمارے ساتھ رہیے گا!🌸🌸🌸

      Like

Comments are closed.