“کاغذ قلم کی کہانی”_______از ثروت نجیب

دیوار پہ روغن ہو جاتے ہیں مگر ایک بار بچے کے دماغ میں خوف بیٹھ گیا تو وہ دیوار تو کیا  سفید کاغذ کی دہشت سے بھی کبھی نکل ہی نہیں پائے گا

Advertisements