ہم انسان_____از سبین ندیم

چاندوستارے ہر وقت دنیا کے آسمان پہ روشن رہتے ہیں لیکن طلوعِ آفتاب سے غروبِ آفتاب تک ان کے وجود سے ہر کوئی ناواقف ہوتا ہے.یہ سورج ہوتا ہے جو چاندوستاروں کے وجود پہ غالب آجاتا ہے ان کی روشنی کو اپنے وجود سے چھپا دیتا ہے.اس سب کے باوجود بھی چاندوستارے کبھی سورج سے الجھتے نہیں اور نہ ہی کبھی سورج کے لیے کوئی رنجش باقی رکھتے ہیں کیوں کہ وہ جانتے ہیں یہ سورج ہی تو ہے جو رات میں انھیں اپنی روشنی سے روشن کر کہ نمایاں کرتا ہے.

ہم انسان بھی اس طرح ہی کیوں نہیں کرتے.ہماری زندگیوں میں بھی سورج کی طرح روشن انسان ہوتے ہیں جو اپنی محنت اور خلوص سے ہمارے ہر تاریک راستے کو روشن کر جاتے ہیں.ان کی روشنی صرف ان ہی تک محیط نہیں رہتی پر وہ اپنے اردگرد موجود ہر شخص کو دنیا کے آسمان پہ اک چمکتا دھمکتا ستارا بنا جاتے ہیں.لیکن ہم انسان ان کی بلندی سے بہت جلد عاجز آجاتے ہیں.ان کی روشنی ہمیں جھلسانے لگتی ہے.ہم ان کی زندگی کا مطالعہ محض اس آس پہ کرنے لگتے ہیں کہ شاید ان کی زندگی میں ہمیں کوئی ایسی رکاوٹ,کوئی ایسا نشان مل جائے جس کو استعمال کر کے ہم اس شخص کی روشنی کم کر سکیں۔اس خوف سے انجان کے اگر اسے ہم نے داغدار کر دیا تو ہم اپنے لیے روشنی اور ہدایت کہاں سے لائیں گے.

_____________

تحریر:سبین ندیم

کور فوٹوگرافی:

عمران ریاض چودھری

صوفیہ کاشف

Advertisements