لیبر ڈے_____چند لفظی کہانی

:لیںبر ڈے۔۔۔۔۔

“ہزار ہزار روپے ملیں گے!”

سب بھاگے اسکی طرف۔۔۔۔”کس چیز کے؟؟”

آج چھٹی تھی سب دیہاڑی دار مزدور بیکار بیٹھے تھے۔

” لیبر ڈے پر اک سیمنار ہے اس میں حاضرین بنکر بیٹھنا ہے!”

تحریر و کور: صوفیہ کاشف

یہ بھی پڑھیں: پچاس لفظی کہانیاں

_______________

ینگ وومنز رائٹرز فورم اسلام آباد چیپٹر کے تحت منعقد ہونے والے لیبر ڈے کے مقابلے میں پہلی پوزیشن اور انعام یافتہ تحریر

جج کا فیصلہ:

محترم ینگ مصنفات
میں نے سب کہانیاں اور نظمیں پڑھیں…
اور بار بار پڑھیں…
ہمارے غربت زدہ معاشرے کی بدقسمتی یہ ہے کہ اب ہمارے سب تہوار چاہے وہ مذہبی ہوں یا اس کے علاوہ…
ہمارے تضادات کو اجاگر کرتے ہیں…
یومِ مئی بھی اسی زمرے میں آتا ہے…
سب کہانیوں میں انہی تضادات کو بیان کیا گیا ہے… جو کہ درست اور متوقع بھی ہے…
سب کہانیاں اور نظمیں بہت اچھی ہیں…
اسلئے بہترین کا انتخاب بہت مشکل ہے…
لیکن مجھے ایک کہانی اور ایک نظم کا انتخاب کرنے کو کہا گیا ہے…

کہانی:
صوفیہ کاشف کی کہانی اپنے مختلف زاویے کے سبب بہتر لگی…

نظم:
فاطمہ عثمان کی انگریزی نظم جامع ہونے کے سبب بہتر لگی…
تمام شرکاء کو مبارکباد.

ملیں کسی سے تو حال پوچھیں
پھر اس سے آگے سوال پوچھیں
یہی ہے راہِ نجات سائیں
سوال پوچھیں سوال پوچھیں

دعا گو
فقیر سائیں

Advertisements