پچاس لفظوں کی کہانی۔۔۔۔۔۔عروج احمد

” زندگی کا پل ”

ایک یورپی ملک میں قریباً چھ سو وائلڈ لائف پل صرف اس لیے بنائے گئے ہیں تا کہ یہ جاندار بحفاظت سڑک پار کر سکیں ۔

کیا ہم کوئی ایسا پل نہیں بنا سکتے جس سے انسان رنگ ، نسل ، مذہب ، عقائد ، طبقاتی تفریق سے بحفاظت زندگی کا پل پار کر سکیں ۔۔۔؟؟؟

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

” بلا عنوان ”

لڑاکا طیارہ قریب آتا ہے ۔۔۔ کان پھاڑ دینے والی آواز تیز تر ہوتی ہے ۔۔۔خوشی سے تمتماتے چہرے لیے لوگ تالیاں پیٹتے ہیں ۔۔۔

لڑاکا طیارہ قریب آتا ہے ۔۔۔ کان پھاڑ دینے والی آواز تیز تر ہوتی ہے ۔۔۔ بچے ، بڑے سہم جاتے ہیں ۔۔۔ جانے آج کس کے گھر قیامت ٹوٹے گی ۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

یہ بھی پڑھیں:آئینہ میں ایک اور پچھتاوا

” ﺣﺴﺎﺏ ﮐﺘﺎﺏ ”
ﺑﺴﺘﺮِ ﻣﺮﮒ ﭘﺮ ﮨﻮﮞ ۔
ﺍﯾﮏ ﺑﮩﺖ ﮐﺎﻣﯿﺎﺏ ﺑﯿﻮﺭﻭﮐﺮﯾﭧ ﮐﯽ ﺣﯿﺜﯿﺖ ﺳﮯ ﺯﻧﺪﮔﯽ ﮔﺰﺍﺭﯼ ۔
ﺣﺴﺎﺏ ﮐﺘﺎﺏ ﮐﺎ ﻭﻗﺖ ﺁﺝ ﻣﻼ ﮨﮯ ۔
ﺳﺎﺭﯼ ﺯﻧﺪﮔﯽ ﭘﯿﺴﮯ ﮐﯽ ﺩﻭﮌ ﻣﯿﮟ ﻟﮕﺎ ﺭﮨﺎ ۔
ﺣﺮﺍﻡ ﺣﻼﻝ ﮐﯽ ﺗﻔﺮﯾﻖ ﺑﮭﻮﻝ ﮔﯿﺎ ۔
ﺳﺎﺭﯼ ﺟﻤﻊ ﭘﻮﻧﺠﯽ ﻣﯿﺮﯼ ﺍﻭﻻﺩ ﮐﯽ ﭨﮭﮩﺮﮮ ﮔﯽ ۔
ﺣﺮﺍﻡ ﮐﻤﺎﻧﮯ ﮐﺎ ﻋﺬﺍﺏ ﺻﺮﻑ ﻣﯿﺮﺍ ﮨﻮ ﮔﺎ ۔

.۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔..

” ﮐﻠﮏ ”
ﺗﻌﻠﯿﻢ ﻣﮑﻤﻞ ﮐﺮ ﮐﮯ ﻧﻮﮐﺮﯼ ﮈﮬﻮﻧﮉﺗﮯ ﺯﻭﮨﯿﺐ ﮐﻮ ﭼﻮﺗﮭﺎ ﺳﺎﻝ ﺁ ﻟﮕﺎ ﺗﮭﺎ ۔
ﮐﮩﯿﮟ ﺳﮯ ﺷﻨﻮﺍﺋﯽ ﻧﮧ ﮨﻮﺋﯽ ﺗﮭﯽ ۔
ﮨﺮ ﮐﻮﺷﺶ ﺑﮯ ﺳﻮﺩ ﭨﮭﮩﺮﯼ ۔
ﮐﯽ ﻧﮯ ﺍﯾﮏ ﻣﺰﺍﺭ ﭘﺮ ﺣﺎﺿﺮﯼ ﮐﺎ ﻣﺸﻮﺭﮦ ﺩﯾﺎ ۔
ﻣﺰﺍﺭ ﮐﮭﭽﺎ ﮐﮭﭻ ﺑﮭﺮﺍ ﮨﻮﺍ ﺗﮭﺎ ۔
ﻋﻘﯿﺪﺗﻤﻨﺪ ﻧﺬﺭﺍﻧﮯ ﺩﯾﺘﮯ ﺟﺎﺗﮯ ﺗﮭﮯ ۔
ﺯﻭﮨﯿﺐ ﮐﮯ ﺫﮨﻦ ﻣﯿﮟ ﺍﯾﮏ ” ﮐﻠﮏ ” ﮨﻮﺍ ۔

…۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

یہ بھی پڑھیں: سودا

” ﺳﻠﻮﮎ ”
ﭼﮩﻞ ﻗﺪﻣﯽ ﭘﮧ ﺟﺎﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﺍﯾﮏ ﻣﺮﺩﮦ ﺑﻠﻮﻧﮕﮍﺍ ﻧﻈﺮ ﺁﯾﺎ ۔ﻭﺍﭘﺴﯽ ﺍﺳﯽ ﺭﺍﺳﺘﮯ ﺳﮯ ﮨﻮﺋﯽ ۔ ﺑﻠﻮﻧﮕﮍﮮ ﭘﮧ ﻧﻈﺮ ﭘﮍﯼ ﺗﻮ ﮐﻮﺅﮞ ﮐﻮ ﺍﺳﮯ ﻧﻮﭺ ﮐﮭﺎﺗﮯ ﺩﯾﮑﮭﺎ ۔
ﻣﺮﮮ ﮨﻮﺋﮯ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺍﯾﺴﺎ ﺳﻠﻮﮎ ۔۔۔ ﺩﻝ ﻣﯿﮟ ﺍﯾﮏ ﮨﻮﮎ ﺳﯽ ﺍﭨﮭﯽ ۔۔۔ ﻣﺮﻧﮯ ﮐﮯ ﺑﻌﺪ ﻭﺭﺍﺛﺖ ﮐﯽ ﺗﻘﺴﯿﻢ ﮐﺎ ﻣﻌﺎﻣﻠﮧ ﻧﻈﺮ ﻣﯿﮟ ﮔﮭﻮﻡ ﮔﯿﺎ ۔۔۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ﻋﺮﻭﺝ ﺍﺣﻤﺪ

وڈیو دیکھیں:چلیں ہمارے ساتھ قراقرم کی سیر پر

Advertisements

6 Comments

  1. Arooj apki hr 50 lafzi kahani tu Mei Zaroor padhti hu
    Chahy jitni b masroof q na hu waqt Zaroor nikalti hu
    Ma Shaa Allah bht umdah likhti Hein ap 🙂

    Liked by 2 people

  2. مختصر لفظوں میں زندگی کی دردناک کہانیاں سمیٹنے کا خوبصورت انداز ہے آپ کا عروج .

    سلامت رہیں.

    Liked by 2 people

Comments are closed.