لوری،نیند کی پری اور ممی

🌺بچوں کے سونے کا وقت ہے۔”چلو چلو،اٹھو، اٹھو،جاو جاؤ”۔روز ہوتا ہے۔زرا سا لیٹ سوے تو صبح باں باں کرئیں گے،اٹھا نہیں جاے گا ،بریک فاسٹ پر الگ بحث ہو گی۔فاطمہ اور آمنہ تو کچھ بڑی ہو گئی ہیں، خود سے تیار ہو جاتی ہیں دو منٹ میں ،مگر محمد۔۔۔ٹراوزر پہنتے پہنتے سوچ میں گم جاتا […]

Read More…

سنو_________رابعہ بصری

🌷سنو، تم لکھ کے دے دو نا کہانی میں کہاں سچ ہے کہاں پہ رک کے تم نے غالباً کچھ جھوٹ لکھنا ہے کہاں ایسا کوئی اک موڑ آنا ہے جہاں چالان ممکن ہے کہاں وہ بیش قیمت سا سنہری چھوٹا سا ڈبہ جو اپنی دھڑکنوں سے اپنے ہونے کی گواہی دے رہا ہے ٹوٹ […]

Read More…

  “ابوــــــ”از ثروت نجیب

💝ابو۔۔۔ ہمارے گھر کی دیوار کا وہ بیرونی حصہ تھے’ جس پہ ہر آتا جاتا جو بھی اس کے من میں آتا ! لکھ جاتا ــــ وہ سہہ جاتے ‘ چپ رہ جاتے جب سے وہ دیوار گری ہے عیاں ہے سارے گھر کا منظر کیا باہر اور کیا اندر ــــ دیوار سے لپٹی کاسنی […]

Read More…

فتووش۔۔۔لبنانی سلاد

پاکستان میں چاول اور بریانی کے ساتھ کچومر سلاد اور سنیک کے طور پر فروٹ چاٹ کو بہت شوق سے تناول کیا جاتا ہے۔مڈل ایسٹ میں ہم نے ایک اور سلاد فتوش ایسا دیکھا کہ جسکے ذایقے کا خصوصاً اگر وہ متحدہ عرب امارات کے روٹانا ہوٹل کا ہو تو اسکا کوئی جواب ہی نہیں۔کوی […]

Read More…

” جنگلی زیرہ”

🌺نئے گھر کے تازہ رنگ روغن دیواروں سے روشن روشن کمروں میں سب کچھ اجلا جلا تھا ـ اگر کچھ آنکھوں میں کھٹک رہا تھا تو وہ تھے بابا آدم کے زمانے کے بنے ہوئے دوشک ـ وہ بھاری بھرکم ‘ بوسیدہ دوشک جن کے سرخ مخملی غلاف بھی ان پہ جچنے سے انکاری تھے […]

Read More…

صبحیں ،بچوں کا کھانااور ممی

🍽سحری کے بعد سونا ممی کے نصیب میں کہاں ہوتا ہے چونکہ دو ہی گھنٹوں میں بچوں کو سکول کے لیے تیار ہو کر نکلنا ہوتا ہے۔چناچہ فیملی کو سحور کروا کر فارغ ہونے لگتی ہے ممی تو بچوں کے اٹھنے اور انکی تیاری کے اوقات ہونے لگتے ہیں۔بیچ کا تھوڑا سا وقت کپڑے استری،کچن […]

Read More…

غزل

🌺 زخم تھا، زخم ہی رہا مولا دِل جو تھا—–آبلہ ہوا مولا لفظ میرے تری عطا مولا تجھ سے کیسے کروں گِلہ مولا کب تلک “کن” کی منتظر ٹھہروں آج ہوجائے فیصلہ مولا ہجر ایسا بسا کہ رنج میں ہوں دل بہت تھک گیا مرا مولا ہم فقیروں کو نیند سے مطلب؟ راس آیا ہے […]

Read More…

“When I just thought of my end”

I flung into my bed, Thinking of the moments of death, And just felt as it was the last second of my life, Which could not anymore thrive. As soon as my hands started getting cold, I thought of my jewels & gold, Which were anymore, Of no use to me. And when I sensed […]

Read More…

اے رب!

الہام کی سرحد کے اُس پار پہنچ کے بے خودی میں تیرے در پہ سرکار پہنچ کے جو ڈالی نظر میں نے تیرے پُرشکوہ مکاں پر کوئی قفل جیسے لگ گیا میری شُستہ زباں پر نظر ہلنے سے عاری، کان سننے سے قاصر بِنا جنبش ہوۓ لب تیری عظمت کے ذاکر اشکبار آنکھ لئے میں […]

Read More…

کمی

“اب یہ نوکری کیوں؟” “میں اپنے جینے کا ثبوت چاہتی ہوں۔” “جینے کا ثبوت گھر کے کام کاج سے نہیں ملتا؟” “نہیں______ان سے تو مجھے اپنی موت کا یقین ہو جاتا ہے!” نور نے بہت کوشش کی نوکری ڈھونڈنے کی،مگر نہ ملی!اسے مصروفیت چاہیے تھی۔کوی ایسی بے ہنگم مصروفیت جو اسکی فرصتوں کو غرق کر […]

Read More…

نظم

جگنو جگنو راہیں کر دوں حلقہ حلقہ باہیں کر دوں روشن روشن پیشانی پہ خوشحالی کا غازہ بھر دوں لب پہ تیرے سجا کے نغمے رقصاں امبر دھرتی کر دوں عشق ہی میرا سرمایہ ہے تو دل مانگے’ جاں میں سر دوں دنیا محبس ہے تیرے بن الجھا الجھا لگتا ہے گردوں تارہ تارہ شامیں […]

Read More…

ممی کی ڈائری ______مائیں اور بند چمنیاں

یہ میرے پہلے بچے کی روداد ہے ۔جب میں نئی نئی ماں بنی۔وہی ساری ماؤں کی طرح،میرے بچے کو ہاتھ نہ لگاو،گندہ نہ ہو جاے،رو نہ پڑے،ڈسٹرب نہ ہو جاۓ۔جس کمرے میں فاطمہ سوتی اس سے سب کو دور دور رکھتی۔دل چاہتا باہر چڑیاں بولنا چھوڑ دیں ،گلی سے ٹریفک بند ہو جاے،آسماں سے طیارے […]

Read More…

ممی کی ڈائری______________ماں ،بچے اور پریوں کی کہانی

پچھلے کچھ دنوں سے اپنی داستان میں میں اپنا پسینہ پونچھتی رہی اور تھکی ہوی ماں کے دکھڑے روتی رہی۔۔۔۔ آج اس پریوں کی کہانی کی بات کرتے ہیں جسکا نام بچے ہیں،ممتا ہے اور ماں بچے کی کہانی ہے۔جب مائیں بچے پال پال تھک جاتی ہیں تو پھر ان کی پریوں کی کہانی بھی […]

Read More…

“بیاہتا بیٹیوں کے دکھ”

ہتھیلی پہ وہ مہندی سے چھاپتی ہیں محبت کو رنگ چڑھے اگر چوکھا ‘ خوشی سے لوبان ہوتی ہیں ـــــ جو پھیکا پڑ جائے کبھی کاجل ‘ گھل گھل کے اشکوں سے چھپا لیتی ہیں آنچل میں’ بتاتی ہی نہیں آخر ! دکھ کیا ہے ان آنکھوں میں ؟ ہزار پوچھو مگر چپ ‘ مقفل […]

Read More…

ممی کی ڈائری _______دعا، ممی اور انگریزی ہدایت نامے

پچھلے کچھ دن سے ایک دعا مسلسل مانگ رہی ہوں” یااللہ! مجھے میرے بچوں کے لیے نرم اور محبت بھرا کر دے! یا اللہ مجھے بچوں کے سامنے سب سے زیادہ ٹھنڈا کر دے!” لگتا ہے ناں عجیب سا کہ میں خود سے اپنے روئیے کو سنبھالنے اور نکھارنے کی بجاے خدا سے دعائیں مانگ […]

Read More…

سفرِ حجاز اقدس اور میں

قسط نمبر 2 “دیدارِ کعبہ “ کل مجھے ایک 85 سالہ اماں بی نے عمرے پہ جاتے ہوئے بتایا کہ وہ پچھلے بیس سالوں سے تہجد میں روزانہ اپنے رب کے حضور جانے کی دعا کر رہی تھیں… میں حیران رہ گئ…. پھر احساس ہوا کہ جس کے دل میں اتنا ارمان ہو تو رب […]

Read More…

ممی کی ڈائری____________قربانی کی گاۓ اور تربیت

لوگ سمجھتے ہیں مجھے موٹا دکھائ دینا پسند ہے،مجھے کھاتے رہنے کی بیماری ہے،میں چاہوں بھی تو اپنا وزن کم نہیں کر سکتی،اور مجھ بارہ من کی دھوبن کے اندر نہ کوی ذندہ وجود ہے نہ کوئ ارمان نہ کوئی ترنگ۔کوی نہیں جانتا کہ کہ مجھ بارہ من کی دھوبن کے اندر آج بھی وہ […]

Read More…

Makkah _The Holy Kabbah! (photography By Sofia Kashif)

“Surely Allah has chosen four cities from amongst all others, just as He, the Noble and Grand has said (in the Noble Qur’an): “I swear by ‘the fig’ and ‘the olive’ and the ‘Mountain of Sinai’ and by this protected city.” ‘The fig’ is the city of Madinah; ‘The olive’ is the city of Baitul […]

Read More…

سفِر حجاز اقدس اور میں

قسط نمبر 1 ( بلاوا ) __________________ میرے داورا میرے کبریا کروں حمد تیری میں کیا بیاں تیری منزلوں میں ہیں فاصلے میرے راستے میں ہیں پیچ و خم کہتے ہیں رب کے در پہ وہی حاضری دیتا ہے جس کے نام کا بلاوا بھیجا گیا ہو. مجھے بھی ادراک تھا بلکہ علم الیقین تھا […]

Read More…

بلاعنوان

اے درد,اپنی آنچ کی شدت کو ماند کر اے رنج, میری سِطر کی سیڑھی اتر ذرا اے زخم, اپنے رنگ ذرا مجھ میں بھر کے دیکھ اے خواب, اسکی نیند کی پلکیں جھپک کے آ اے نم, ذرا سا ٹھہر جا، آنکھوں میں رک ذرا اے حرف, فکروفن کی کہانی سنا مجھے اے نصف شب […]

Read More…

میرے خواب________ممی کی ڈائری

یہ وہی جگہ ہے جہاں کھڑے ہو کر مجھے اپنے بچوں کی سکول بس کا انتظار کرنا ہے جو میں پچھلے سات سال سے کر رہی ہوں۔پہلے فاطمہ کے لیے اب محمد کی لئے!اور آج بہت عرصے بعد پھر سے جی چاہا کہ بلاگ لکھوں۔مجھے پھر سے وہ وقت یاد آیا جب فاطمہ تین چار […]

Read More…

دیوانے

دیوانے نے کارواں کاآغاز کیا۔ وہ کچھ اس طرح سرگرمِ سفر ہوا کہ دوبارہ پلٹ کے پیچھے نہیں دیکھا۔ اپنے سر پر کفن باندھ کے چلا تھا۔ اپنی دھن کا پکا تھا۔ اس لئے حالات سے نہیں گھبرایا۔غمِ جاناں جب اسے رلاتا تو وہ بس ہنس کر تمام دکھ درددرگزر کرتا۔سماں بگڑتا سنورتا لیکن وہ […]

Read More…

غزل______

میرا زکر ہو گا اسکی زندگی کی کتاب میں کیا اتنا سکوں کافی ہے میرے درد کے نصاب میں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کچھ بولتا گر وہ ،اسکے لہجے میں کچھ تو ڈھونڈتے کوئ خوشی تھی نہ غم، وہ خموش تھا جواب میں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ میں کس سپنے کی تعبیر ڈھونڈوں کہ یہ وصال روشنیوں کے باب میں نہ […]

Read More…

“کچھ اپنے خیالات کے بارے میں”

خیال ہیں مرے یہ، عجب ابہام ہیں مہمل ہیں کبھی،کبھی الہام ہیں… اپنی ذات کا ہی ہیں کبھی استہزاء کبھی حقیقت سے بےانتہا انضمام ہیں… اکثر تو دُوجوں کی خاطر بھی تحریک٬ کبھی میرے لیے ہی وجہِ انقسام ہیں… دل کو کبھی شکستہ کردینے والے، کبھی اپنی وسعت میں ازدحام ہیں… کبھی مجھ پہ تحکم […]

Read More…

     “آسرا”______ثروت نجیب

” بیا کہ بریم م به مزار سیلِ گلِ لالہ زار” ــــ” سیلِ گلِ لالہ زار” ــــ ـ آسرا گنگناتے ہوئے کھڑکیوں کے شیشوں کی صفائی کے دوران اور اپنی مترنم آواز پہ خود ہی جھوم رہی تھی ـ آسرہ بائیس سالہ نوخیز چنچل بوٹے قد کی’ کتابی چہرہ ‘ بادامی آنکھیں تیکھے نین نقش […]

Read More…

جدائ_______رابعہ بصری

ہاں وہی کاسنی نہر تھی چار سْو چپ دھری تھی وہ میرے روبرو سر جھکائے پشیمان سا , ایسے بیٹھا تھا جیسے کوئی اپنی ساری کمائی لٹا کے بھی ہار آیا ہو عجیب سا کھردرا زنگ آلود چہرہ کہ جِس پہ بہت کچھ لِکھا تھا پڑھ لِیا تھا, سمجھ نہ سکی اسی دِلگیر لمحے میں […]

Read More…

“ابلہی”__________از ثروت نجیب

ہتک آمیز لفظوں کی دو دھاری تلوار پہ چل کے گھائل کر دو ـ ـ ـ ـ خود کو دست و پا! کس نے کہا تھا؟ میری دستار کے بل سے الجھوـــ میرے آج اور کل سے الجھو ــــ کس نے کہا تھا؟ مزاح کو ظرافت کے معیار سے اتارو ! ہوا کو پتھر مارو! […]

Read More…

بے وفا_______صوفیہ کاشف

مخنی سا قد،سفید رنگ،جھکے کندھے،چہرے پر مسکینیت لیے وہ روزگار کی تلاش میں دوبئی آیا تھا ،آج اسکا انڈے جیسا سفید رنگ جھلسا ہوا گندمی اور چہرے پر لقوہ کا حملہ ہو چکا تھا۔عمر کی کتنے ہی طویل موسم گرما اس نے اس ننگے سر آگ کے تندور میں گزارے تھے جہاں سال کے دس […]

Read More…

حد__________صوفیہ کاشف

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ “چلو تمھارے ساتھ چلتا ہوں!” “کہاں تک چلو گے؟” “جہاں تک تم چاہو!” اگر میں کہوں کہ زمان و مکان کی آخری حد تک؟؟؟تو چلو گے ساتھ؟!” “اگر تم کہو گی کہ مکاں سے لا مکاں تک ,,,,تو بھی چلوں گا!” میں اسکے چہرے کی طرف مڑ کر اسکی آنکھوں کے رنگ کھوجنے لگی […]

Read More…

Note to self by Connor Franta________ کتاب تبصرہ از صوفیہ کاشف

ایک چوبیس سالہ بلاگر ،انسٹاگرامر Connor Franta ,جسکی پہلی کتاب A work in Progress بہترین سوانحی عمری اور یاداشت کے طور پر نیویارک ٹائمزبیسٹ سیلر رہی ہے۔یہ کتاب اسکے زاتی احساسات اور واقعات اور اپنی شخصیت کے اندرونی تہہ خانوں تک روشنی کی لہریں لیجانے اور انکی تاریکی کو اجالے میں بدلنے کے سفر کی […]

Read More…

ساون_________اے_کے_آصف

برسنا سرد ساون کا اور اس پر اسکا یاد آنا بڑا مشکل ہے میرے واسطے اب اس ظالم کو بھلانا جو کہتا تھا میں تیرا ہوں فقط تیرا ہی رہنا ہے تیرے بن رہ نہیں سکتا تجھے اب یہ بھی کہنا ہے تو میری ہی رہے گی۔۔ اور میں تیرا رہوں گا اب کوئی تیجا […]

Read More…

Style Icon _______ picks of the month

The latest Michael Kors large leather and canvas tote from March collection with a gorgeous color combination and unique design, brings a two years warranty and a complimentary travel vanity pouch with it. Price:2,510 AED 548:00$ L’Oréal presents a perfect face wash with three pure clay and Eucalyptus .It works in three wonderful ways by […]

Read More…

Gazebo

One of the best Indian taste in town, Gazebo is located in many very famous locations, you can easily get one beside your corner. Service: Upto the mark Efficient Polite Active Dinning Hall: private family chambers Open places included Well designed Perfect decor Menu: A big variety of grill,curries,biraynies, vegans,chappaties,nan and Indian @Pakistani snacking like […]

Read More…

غزل۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔رابعہ بصری

وہ میرے گاؤں میں ٹھہرا نہ اپنے گھر میں رہا عجیب شخص تها میرے لیے سفر میں رہا اسے ہی پوچھتے ہیں تم نے کیا کیا بابا جو اپنے بچوں کی خاطر نگر نگر میں رہا وہی تھا دھوپ کی شدت جو ہنس کے سہتارہا تُو اپنا تخت لئے سایہ ء شجر میں رہا ہماری […]

Read More…

اس سے پہلے۔۔۔۔۔۔۔صوفیہ کاشف

اس سے پہلے کہ تلاطم خیز لہریں ہماری ڈوبتی ابھرتی کشتی کو گہرائیوں میں دفن کر دیں اور ہمارے ریختہ ٹکڑے لہروں پر نشان عبرت بنے خوفزدہ لوگوں کو اور پریشاں کریں اس سے پہلے کہ طلب کی بادو باراں میں گر پڑیں ہماری احتیاط کی چھتیں! اس سے پہلے کہ باغوں کے جھولے بنیادوں […]

Read More…

پتے اور شجر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔از میمونہ صدف

اے میرے ہم وطنو! کبھی دیکھا تم نے خزاں رسیدہ پتے کو جب جب شجر سے جدا ہوا پہلے تو ہوا سنگ بہت اڑا پھر جب گرا قدموں تلے روندا گیا شجر تو قائم رہتا ہے نئے پتوں کا گھر بنتا ہے جو اسے سے جڑے اپنا اور اس کا تن سجائے رہتے ہیں یہ […]

Read More…

دیوانے۔۔۔۔۔۔۔از صوفیہ کاشف

یہ دیوانے ہیں کتاب کھولے دیوار پڑھتے ہیں کھلی آنکھوں خواب بنتے ہیں بند آنکھوں تلاشتے پھرتے ہیں یہ دیوانے ہیں ریت پر گھنٹوں بیٹھے لہروں سے بات کہتے ہیں ہواؤں سے سرگوشیاں گھٹاؤں کے سنگ رات کرتے ہیں یہ جنکی آنکھوں سے تعبیریں موتی بنکر جھڑتی ہیں یہ جنکی ہتھیلیوں سے منزل !ریت بنکر […]

Read More…

ایک نظم،ان گنت سوال۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔رابعہ بصری

ستارہ گر ، جو روشنی تھی پھوٹنی وہ کیا ہوئی جو رنگ تھے بکھير نے کدھر گئے عطاؤں کو رضا سمجھنے والا وقت کیا ہوا محبتوں سے دل تہی ، یہ مفلسی ــــ منافقوں سے دوستی ، نہیں، نہیں وہ لفظ جوڑ جوڑ کے عقیدتوں سے محفلیں سجانے والے کیا ہوئے متاعِ جاں، ستمگری پہ […]

Read More…

کھری محبت……..از رضوانہ نور

تم جو ہنس کے کہتے ہو درد سے ہوں ناواقف کرب اور اذیت سے دور دور کا ناتہ خوشیوں کے ہنڈولے میں جھولتی سی پھرتی ہوں خوشنما تصور ہے اختلاف رستے سے انحراف منزل سے تم تو کر بھی سکتے ہو خود سے اڑ بھی سکتے ہو مرد جو ٹھہرتے ہو میں تو کملی عورت […]

Read More…

مگر!…………از صوفیہ کاشف

اگر جو تری ہر یاد کے بدلے ترے آنگن میں پھول کھلنے لگتے تو کیسے گھر کے سب دیوارو در، ہر ذینہ،ہر آنگن ، پھولوں سے بھر چکا ہوتا پاؤں تک دھرنے کو وہاں تجھے رستہ نہیں ملتا، اور اگر جو میری آنکھ میں اترا تری صورت سے جڑا ہر اک خواب قدموں کے نیچے […]

Read More…

اجازت دو! ۔۔۔۔از رابعہ بصری

تم مجھے جوڑنے آئے تھے میرے کِرچی کِرچی وجود کےسبھی ٹکڑے اپنے سنہری ہاتھوں سے چْن کے میرے سبھی گھاوُ بھرنے کا دعوٰی کیا تھا ہِجر کی ساری تھکن سمیٹنے کا وعدہ کیا تھا جِس کی دکھن نے بدن کو راکھ کر ڈالا تھا میرا گندم کی بالی کا سا کھِلتا ہوا رنگ و روپ […]

Read More…

گڑیا…………….از بنت الھدی

لوگ کہتے ہیں ابھی تو ہو تم اک گڑیا سی پر سوچ تمھاری بلند و بالا پہاڑوں جیسی سلسلہ وار سمندروں کی گہرائی جیسی آخر کس گھاٹ کا رنگ لاگا ہے تجھ کو کہ اتنی سی عمر میں اتنی پختہ ہو گئی نہ تیرے بالوں میں چاندی اتری اور نہ تیرے چہرے پہ وقت کی […]

Read More…

ارضی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

کوئی پی کے نام کا کنگن ہو! کوئی چُوڑا ہو! جسے بانجھ کلائیاں پہن سہاگن ہو جاویں مرا روپا، جوبن ہار گِیَو! سرکار سائیں! سانول کا بچھوڑا مار گِیَو! مرے سینے درد غموں کے تیر اتار گِیَو! بیمار نصیبوں بیچ سَجَا منجدھار گِیَو! منجدھار پڑے! سرکار سائیں! غمخوار سائیں! اک بار سائیں! سنو عرضی بس […]

Read More…

“گنجلک بیلیں”۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔…ثروت نجیب

ہزاروں باتیں دل کی مُنڈیروں پہ چڑھی گھنی بیلوں کی مانند بےتحاشا بڑھتی جا رہی ہیں کشف کے کواڑوں پہ اک چھتنار سا کر کے میری آنکھوں کے دریچوں تک اس قدر پھیلی ہوئی کہ جہاں بھی اب نگاہ ڈالوں ہریاول ہی دکھتی ہے رازداری کا کلوروفل میرے قرنیوں سے آ چپکا ہے جس کی […]

Read More…

“داستان نفس”

“داستان نفس” رشتوں کے دھاگوں سے بُنی کبھی ریشم کبھی کھدر سی کبھی کھردرا کھردرا پٹ سن ہے کبھی کوتاہ کبھی صدر سی کبھی نیلگوں نیلگوں سوچ میں گم کبھی میں’ ھم اور تم کبھی فکروغم میں زردی مائل کبھی خوف کا رنگ اسکے حائل کبھی خوشیوں کی لالی لے کر محبت کا منبع ‘ […]

Read More…

سجدہ سہو از صوفیہ کاشف

عورت جو ہر شے کو اسکے ٹھکانے پر رکھنے کی کوشش کرتی پر نہ رکھ پاتی.کوی غلط بنت
پڑ گیی تھی اسکی زندگی کے سویٹر میں ، کوی ٹانکا جو غلط لگ گیا تھا.یا پھر وہ کسی
آسیب زدہ راستے پر بھٹک کر رہ گیی تھی کہ کھو کھو جاتی.ڈھونڈنے کی کوشش کرتی اور
پھر گما جاتی.سنبھلتے سنبھلتے پھر پھسل جاتی.ایسی ہو کر ری گیی تھی اسکی
زندگی.

Read More…

کیا کرو گے

🌷 جو دعا روتی رہی رات بھر مقبول ہو جاے تو کیا کرو گے چلتے چلتے پاؤں کے سامنے میرا در آ جاے تو کیا کرو گے وہ جس خواب سے تم ڈرتے سونے سے بھی کتراتے ہوں وہ سچ بنکر جو زمین پر اتر کے آ جاے کیا کرو گے تیری طلب کا کشکول […]

Read More…

عید_______از نوشابہ شوکت

🌺وسط میں ورانڈے کے بیل اک گلابوں کی فرش سرخ اینٹوں کا صبح ہی سے چھڑکاو عید ملنے والوں کا اک طویل سلسلہ چوڑیوں کی چھن چھن میں قہقہوں کی کھن کھن کھن کھڑکیوں کی آوٹ سے دل کی منتظر نظریں آنے والی آہٹ کو شرمگین پلکوں پہ سئنت سینت کررکھتیں۔۔۔۔ —– مہندی اور خوان […]

Read More…

عورت اور منافقت___ از ابصار فاطمہ

. پہلے تو ہمیں یہ واضح ہونا ضروری ہے کہ منافقت کیا ہے. منافقت کا رویہ ہمیشہ منفی معنی میں استعمال ہوتا ہے اور مصلحت پسندی یا مصالحت پسندی کو منافقت نہ کہنا چاہیے نہ سمجھنا چاہیے. کچھ عرصے پہلے ایک دلچسپ اوپن ڈسکشن ہوئی میرے گروپ میں کہ ہم جھوٹ کیوں بولتے ہیں اور […]

Read More…

خواتین منافق ہیں!از اُمِ کلثوم

ہم اپنوں بیگانوں کے ڈر سے گونگی بہری بات کہیں داغِ جگر کو لالۂ رنگیں اشکوں کو برسات کہیں سورج کو سورج نہ پکاریں دن کو اجلی رات کہیں جی ہاں بالکل درست خواتین واقعی بہت منافق ہوتی ہیں رات کو شوہر سے مار کھانے کے بعد صبح کمرے سے نکلنے سے پہلے نہا دھو […]

Read More…